الللہ اہل پاکستان کی حفاظت فرمائے، آمین

ایک روز قبل برطانوی وزیراعظم بورس جونسن نے اپنے دو مشیران کے ساتھ برطانوی پریس کو موجودہ بحران کے حوالے سےحکومتی لائحہ عمل پر 50 منٹ کی بریفنگ دی، جسمیں کہ سوال جواب کا بھی سیشن شامل تھا. قطع نظر اسکے کہ یہاں بھی حکومتی پالیسی اور حکمت عملی پر سیاسی مخالفین و برطانوی شہری کھل کر معترض ہیں، لیکن 50 منٹ کی مذکورہ پریس بریفنگ میں حکومتی اسٹریٹجی کی تفصیلی وضاحت کی گئی اور پریس کے سوالات و تنقید کا جواب دیا گیا.

اپنے حالیہ اور ممکنہ فیصلوں پر برطانوی عوام کو اعتماد میں لیا گیا. مذکورہ فیصلوں سے کس طرح معمول کی زندگی متاثر ہو گی اور عوام سے کیا تعاون درکار ہے، بیان کیا گیا. عوام کو بتایا گیا کہ اسکول بند نہ کرنے کا فیصلہ کیوں کیا گیا ہے اور کب نظر ثانی کیا جا سکتا ہے. مذکورہ بحران میں کمیونٹی، چرچ، مساجد سے کیا توقع ہے اور ان کو کس طرح متحرک کیا جائے گا. مذکورہ مرحلہ گزرنے تک کاروباری سرگرمیاں جاری رکھنے اور معیشت پر اثرات کم سے کم کرنے کیلئے کیا کچھ کیا جا رہا ہے. مزید، قدرتی آفت سے نبرد آزما ہونے کے بعد معیشت کو جلد از جلد پٹری پر واپس لانے کیلئے کیا ممکنہ حکمت عملی ہو سکتی ہے. کاروباری اداروں اور طبقے کو موجودہ بحران سے نکالنے اور انہیں رواں رکھنے کیلئے ریلیف اور liquidity مہیا کرنے کے حوالے سے حکومتی اقتصادی و مالیاتی پالیسی کیا ہوگی. کونسل پراپرٹی میں رہائش پذیر کرایہ داروں کو کیا رعایت دی جا سکتی ہے…….

ایک فلاحی ریاست، جہاں ادارو‍‍ں کے دیوالیہ ہونے کے نتیجے میں روزگار سے محروم افراد کی کفالت و مالی معاونت، ریاست کی براہ راست و قانونی ذمہ داری ہو، وہاں کاروبار اور معیشت چلانے اور لوگوں کے روزگار جاری رکھنے کی حکومتی دلچسپی و پریشانی ایسی ہی ہوا کرتی ہے.

الحمداللہ، ہماری ریاست نے معمول کے حالات میں بیروزگاری و فاقہ کشی سے بیزار، فلیٹ کی بالکنی سے کودنے اور خود سوزی کرنے والوں کیلئے دعائے مغفرت کے سوا کیا کر لیا جو ایک ناگہانی آفت کے نتیجے میں بیماری و بھوک سے مرنے والوں کیلئے کچھ کرے گی؟

نتیجتاً، آپ وزیراعظم پاکستان عمران خان صاحب کے قوم سے خطاب کا فرق سمجھ سکتے ہیں. جب کہنے اور بتانے کو کچھ نہ ہو تو پریس بریفنگ نہیں، خطاب ہوا کرتے ہیں. خطاب، جن میں بیکٹیریا اور وائرس کا فرق، ہاتھ دھونے کی افادیت، مسلمان کے اللھ پر ایمان و توکل کی حکایت، موت کے برحق ہونے کی تلقین، اور گھبرانے سے پرہیز کی نصیحت کی یاد دہانی ہوا کرتی ہے.

اللھ اہل پاکستان کی حفاظت فرمائے، آمین

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *